پاکستانی مصنفہ کاملہ شمسی نے اعلیٰ ادبی ایوارڈ جیت لیا

پاکستانی نژاد برطانوی مصنفہ کاملہ شمسی نے ’ویمنز پرائز فار فکشن‘ ایوارڈ جیت لیا، کامیلہ شمسی کو یہ ایوارڈ ان کی کتاب ’ہوم فائر‘ پر دیا گیا۔

’ویمنز پرائز فار فکشن‘ ادب کی دنیا کے معتبر ترین ایوارڈز میں سے ہے، کاملہ شمسی ویمنز پرائز فار فکشن ایوارڈ جیتنے والی پہلی پاکستانی مصنفہ ہیں۔

 ہوم فائر کاملہ شمسی کا ساتواں ناول ہے جسے ایوارڈ کے لیے نامزد کیا گیا ہے، اس سے قبل انہیں 2اور ایوارڈز بیلز اور اورنج پرائز کے لیے نامزد کیا گیا تھا۔بنیاد پرستی اور خاندانی وفاداریوں کے بارے میں لکھا گیا ناول ہوم فائر یونانی المیے کی ایک نئی شکل ہے۔

ایوارڈز کمیٹی کی ججز میں شامل سارہ سینڈز کا کامیلہ شمسی کے ناول کے متعلق کہنا ہے کہ اس کتاب کو اس لیے ایوارڈ کے لیے چنا گیا کیونکہ یہ موجودہ وقت کے متعلق بات کرتی ہے،اس ناول میں مصنفہ نے شناخت، وفاداریوں، محبت اور سیاست جیسے موضوعات کو مہارت کے ساتھ سمویا ہے۔

ایوارڈ کی بانی مصنفہ کیٹ موسیٰ نے سینٹرل لندن میں منعقد تقریب کی میزبانی کے انجام ادا کیے۔

اس ایوارڈ کا آغاز 1996ء میں ہوا جسے جیتنے والی مصنفہ کو 30 ہزار برطانوی پاؤنڈ ملتے ہیں۔

کاملہ شمسی کراچی میں پیدا ہوئیں اور ابتدائی تعلیم بھی انہوں نے یہیں سے حاصل کی جس کے بعد سے وہ لندن میں قیام پذیر ہیں۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.