سول ایوی ایشن : پی آئی اے کے معطل ہونے والے15کپتانوں کے لائسنس بحال

 پی آئی اے کی غلطی سے معطل ہونے والے15کپتانوں کو بحال کرکے سول ایوی ایشن اتھارٹی نے لائسنس بھی بحال کردیے ہیں اور  ان کو جہاز اڑانے کی اجازت بھی دے دی گئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق سول ایوی ایشن اتھارٹی نے پی آئی اے انتظامیہ کی غلطی کے باعث کپتانوں کے لائسنس کے معطلی کے چند روز بعد ہی15کپتانوں کے لائسنس دوبارہ بحال کردیے، معطل ہونے والے کپتانوں کو تعلیمی اسناد جمع نہ کرانے پر سی اے اے نے معطل کردیا تھا ۔

مذکورہ کاک پٹ کرو کو تعلیمی اسناد سول ایوی ایشن اتھارٹی کو فراہمی میں پی آئی اے سست روی کی مرتکب ہوئی تھی، بحالی کے نوٹی فکیشن کی کاپی اے آروائی نیوز کو موصول ہوگئی۔

سول ایوی ایشن اتھارٹی کی جانب سے کپتانوں کے لائسنس دوبارہ بحال کرنے کا باقاعدہ نوٹی فکیشن بھی جاری کردیاگیا ہے۔ نئے احکامات کے تحت لائسنس کی بحالی کے بعد کپتانوں کو جہاز اڑانے کی اجازت بھی دے دی گئی ہے۔لائسنس بحال ہونے والے کپتانوں میں عقیل اختر، جہانگیر فرحت، بختاور ایچ جعفری، قاسم قادر، حماد اعجاز درانی، اشفاق حسین، حمادالدین خان، سعد اعجاز درانی، علی حسن، روحیل فخر بٹ، راجہ جہانزیب زاہد، شہریار محمود خان، فرحان فرخ، انور زیدی اور مراد علی ارباب شامل ہیں۔واضح رہے کہ سپریم کورٹ کے احکامات پر پی آئی اے میں تعلیمی اسناد کی جانچ پڑتال کا عمل تواتر سے جاری ہے جبکہ ذرائع کے مطابق سول ایوی ایشن اتھارٹی کے (اے این او ) قوانین میں تعلیمی اسناد طلب کرنے کا کہیں ذکر نہیں ہے، یاد رہے کہ پی آئی اے جعلی ڈگریوں کے حامل چھ کپتانوں کو ملازمت سے فارغ کرچکی ہے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.